کرپٹ عناصر پارٹیاں اور جھنڈے بدل کر دوبارہ قوم کے کندھوں پر سوار ہونا چاہتے ہیں. سینیٹر سراج الحق

لاہور 29جون2018ء
امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ شفاف الیکشن کے حوالے سے شکوک وشبہات کا خاتمہ ہوناچاہیے ۔ الیکشن کے حوالے سے ابھی تک گرد وغبار موجود ہے ۔ خونی انقلاب کا راستہ روکنے کا واحد طریقہ بیلٹ بکس اور عوام کے اعتماد کو بحال کرنا ہے ۔ ماضی میں ہر الیکشن پر لوگوں نے انگلیاں اٹھائیں ۔ اگر اب شکوک و شبہات پیدا ہوئے تو اس کے نتائج بہت خطرناک ہوسکتے ہیں اور قوم کو اس کے سنگین نتائج بھگتنا پڑیں گے ۔ عوامی مینڈیٹ کا احترام ہوتا تو مشرقی پاکستان بنگلہ دیش نہ بنتا ۔ کرپٹ حکومتوں نے عوام کو عزت کی زندگی سے محروم کیا اور عام آدمی کی خوشیوں پر ڈاکہ ڈالا ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں مرکزی میڈیا کے ذمہ داران کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میںسیکرٹری اطلاعات قیصر شریف و دیگر شریک تھے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ کرپٹ عناصر پارٹیاں اور جھنڈے بدل کر دوبارہ قوم کے کندھوں پر سوار ہونا چاہتے ہیں ، جن لوگوں کی کرپشن اور لوٹ مار نے عوام کی خوشیاں چھینی ہیں ، وہ مختلف پارٹیوں میں چھپ کر دوبارہ منتخب ہوناچاہتے ہیں مگر اب کی بار انہیں عوام یہ موقع نہیں دیں گے ۔ انہوںنے کہاکہ جن لوگوں نے عوام کو لوٹا ، عوا م انہیں بھلا نہیں سکتے ۔ ملک میں پینے کا صاف پانی نہیں ، اڑھائی کروڑ بچے تعلیمی اداروں سے باہر اور لاکھوں نوجوان روزگار کے لیے مارے مارے پھر رہے ہیں ۔لوڈشیڈنگ کے اندھیرے ابھی تک چاروں طرف پھیلے ہوئے ہیں جبکہ پارٹیاں بدل بدل کر عوام کی گردنوں پر سوار ہونے والے کرپٹ عناصر ایک بار پھر لوگوں کو سبز باغ دکھا رہے ہیں ۔ اگر یہ کرپٹ اور بددیانت ٹولہ ایک بار پھر اسمبلیوں میں پہنچ گیا تو پاکستان کے روشن مستقبل کے امکانات معدوم ہو جائیں گے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل قوم کی واحد امید ہے اور کرپشن فری پاکستان کے لیے ایم ایم اے کی حکومت ناگزیر ہے کیونکہ کرپٹ عناصر کا راستہ روکنے کے لیے دیانتدار اور محب وطن قیادت کا برسراقتدار آنا ملک و قوم کی ضرورت ہے ۔انہوںنے کہاکہ میرے قافلے میں کوئی نیب زدہ نہیں ہے ۔ نیب زدہ لوگوں کو ایک بار پھر موقع مل گیا تو وہ لوٹ مار اور کرپشن کے تمام سابقہ ریکارڈ توڑ دیں گے ۔ انہوںنے کہاکہ ملک و قوم کے مسائل کی جڑ یہی لوگ ہیں جو پارٹیاں او رچہرے بدل کر اقتدار میں آتے ہیں اور پھر پانچ سال تک حکومتی ایوانوں میںذاتی مفادات سمیٹتے ہیں ،ان لوگوں کو ملک و قوم کا مفاد عزیز نہیں ہوتا ۔سراج الحق نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل اقتدار میں آکر سب لٹیروں کا کڑا احتساب کرے گی اور لوٹی دولت واپس لے کر اسے عوام کی فلاح و بہبود پر خرچ کریں گے ۔