مجلس عمل ہی کراچی کے عوام کی حقیقی قیادت ہے اور دینی قوتیں ہی کراچی کو اس کی اصل حالت میں بحال کرائیں گی ۔ ڈاکٹر معراج الہدیٰ

جماعت اسلامی صوبہ سندھ کے امیر و مجلس عمل صوبہ سندھ کے نائب صدر ڈاکٹر معراج الہدیٰ نے کہاکہ آج کراچی میں مجلس عمل نے ایک علماءکنونشن بلایا تھا لیکن یہ ایک زبردست بڑا اور عظیم الشان جلسہ عام بن گیا ہے اور ثابت ہوگیا ہے کہ کراچی اسلام سے محبت کرنے والوں کا شہر ہے اور شہر کے دینی اور نظریاتی تشخص کو کبھی خراب نہیں ہونے دیں گے ۔مجلس عمل ہی کراچی کے عوام کی حقیقی قیادت ہے اور دینی قوتیں ہی کراچی کو اس کی اصل حالت میں بحال کرائیں گی ۔25جولائی کا سورج متحدہ مجلس عمل کی کامیابی کی صورت میں نمودار ہوگا۔جماعت اسلامی کراچی کے امیر صدر مجلس عمل کراچی حافظ نعیم الرحمن نے میزبان کی حیثیت سے تمام قائدین اور علماءکرام کو خوش آمدید کیا اور ان کی آمد کا شکریہ اداکیا اور کہا کہ 25جولائی کو ان شاءاللہ کراچی کے عوام کتاب کے نشان پر مہر لگاکر مجلس عمل کے حق میں فیصلہ دیں گے اور مجلس عمل عوام کے اعتماد پر پورا اترے گی ۔انہوں نے کہاکہ علماءکی عظیم جدوجہد کے باعث ہی ملک کے اندر قرارمقاصد منظور ہوئی اور ملک کو اسلامی مملکت قرار دیا گیا ۔ علمائے کرام نے ہی مل کر 22نکاتی ایجنڈا پیش کیا ایک اسلامی ریاست کا اور یہ پیغام دیا کہ تمام مسالک اور مکاتب فکر کے علما متحد اور متفق ہیں ان نکات کے بعد سیکولر اور لبرل قوتوں کے منہ بند ہوگئے ۔اسلام ہمیشہ کے لیے ہے اور ہمیشہ رہے گا ۔ہر دور میں اسلام ہی انسانیت کی فلاح و کامیابی کا ضامن ہے ۔انہوں نے کہاکہ سیکولر اور لبرل قوتیں مسلک اور فرقے کی بنیاد پر تقسیم کرنا چاہتے ہیں لیکن مجلس عمل ان کی سازشوں کا توڑ ہے اور ان کو کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔کراچی کے عوام برسوں سے مصائب و مشکلات کا شکار ہیں ۔ آج عوام بجلی اور پانی سے محروم ہیں مجلس عمل ان مسائل کو حل کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے ۔ عبد الستار فغانی اور نعمت اللہ خان ایڈوکیٹ نے کراچی کے لیے پانی کا انتظام اور بندو بست کیا لیکن عوام کے حقوق کے نام پر سیاست کرنے والوں نے عوام کو کچھ نہیں دیا ۔25جولائی کو مجلس عمل کراچی میں تاریخی کامیابی حاصل کرے گے۔جمعیت اہلحدیث کے سید عتیق الرحمن کاشمیری نے کہاکہ دینی قوتیں ملک میں شریعت کے نفاذ کی کوششیں ہمیشہ کرتی رہی ہیں اور ان کی کوششوں کی وجہ سے ہی اس ملک کے اندر اسلام دشمن قوتیں کامیاب نہیں ہوسکی ہیں ۔ ہمارا اتحاد ایک نظریے اور عقیدے کے لیے اور ان شاءاللہ ہم ضرور کامیا ب ہوں گے۔اسلامی تحریک کے علامہ غلام محمد نے کہاکہ مجلس عمل اسلام کے پرچم کو سربلند کرے گی اور پاکستان کو اس کے حقیقی نظریے اور مقصد وجود سے ہمکنار کرے گی ۔پارلیمنٹ کو اس ملک کو نظام مصطفی کے مطابق چلائے گی ہمارے قائدین جب حکمران بنیں گے تو دن اور رات عوام کے خادم بنیں گے ۔مجلس عمل کے رہنما لیاری سے قومی اسمبلی کے امیدوار مولانا نورالحق نے کہاکہ لیاری وہ علاقہ ہے جہاں عرصے سے خون خرابہ ہے لیکن مجلس عمل لیاری کے مکینوں کے لیے امن و سکون اور اخوت ومحبت کا پیغام لے کر آئی ہے اور عوام کے مسائل حل کرے گی ،عوام کو بد امنی سے نجات دلائے گی ۔مجلس عمل کے رہنما مولانا غیاث نے کہاکہ ہم حالات کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہیں ، علمائے کرام اور عوام کی طاقت سے ملک کو سیکولر اور لبرل بنانے والوں کے چنگل سے ضرور آزاد کرائیں گے 25جولائی کو کتاب تاریخی کامیابی حاصل کرے گی۔مولانا احسان اللہ ٹکروی نے کہاکہ ملک کو اس وقت علمائے کرام کے اتحاد کی ضرورت ہے اور یہی دینی اتحاد ملک دشمن قوتوں کے خلاف آہنی دیوار ثابت ہوگا ۔جمعیت اہلحدیث کے رہنما مولانا افضل سردارنے کہا کہ مجلس عمل نے ایک بار پھر ثابت کیا ہے کہ ہمارے پلیٹ فارم پرشیعہ ،سنی ، دیوبندی ،بریلوی سب جمع ہیں اور دینی قوتیں متحد ہیں ۔ مسلمانوں کو مسالک کی بنیاد تقسیم کرنے کی سازشیں ماضی میں بھی ناکام ہوئی ہیں اور آئندہ بھی ناکام ہوں گی اور ملک پاکستان اسلام کا قلعہ ثابت ہوگا ۔مجلس عمل کراچی کے جنرل سکریٹری و جمعیت علمائے پاکستان کے رہنما مستقیم نورانی نے کہاکہ ہمارا مقصد یہ ہے کہ ملک کے ایوانوں میں اللہ کے کلمے اور نبی کریم کے فرمان کو پہنچانا ہے ۔دستور کی اسلامی دفعات کا اور دینی تشخص کا تحفظ کرنا ہے ۔مجلس عمل کے صوبائی رہنما ، سابق ممبر رکن اسمبلی اور این اے 247کے نامزد امیدوار محمد حسین محنتی نے کہا کہ پاکستان کو اس کے نظریے اور اس کے مقصد سے دور کرنے کی سازش کی گئی اور حکمرانوں نے ملک کو تباہ و برباد کردیا ۔ رشوت ، کرپشن اور اقربا پروری عام کیا گیا اور عوام کو بنیادی ضروریات تک سے محروم کردیا گیا ۔ سندھ اسمبلی کے اندر اسلام مخالف قانون بنایا گیا لیکن دینی قوتوں کی جدوجہد نے اس قانون کا راستہ روکا ۔اگر مجلس عمل کے نمائندے پارلیمنٹ میں ہوں گے تو ملک میں قرآن و سنت کے خلاف کوئی قانون سازی نہیں کی جاسکے گی۔مجلس عمل کے سابق صوبائی پارلیمانی لیڈر مولاناعمر صادق نے کہاکہ مجلس عمل کا مشن ہے کہ ہم سب کو مل کر اتحاد امت کے لیے کام کریں گے ، ہر قسم کی فرقہ واریت ختم کریں گے ، سیکولر اور لبرل جماعتیں اور قوتیں ملک میں مغربی و ہندوانہ تہذیب و کلچر لاناچاہتی ہیں لیکن مجلس عمل ان کے خلاف مضبوط ڈھال ثابت ہوگی اور ان کی سازشوں کو ناکام بنائے گی۔جمعیت علمائے پاکستان کے رہنما و مجلس عمل کراچی کے نائب صدر مولانا غوث محمد صابری نے کہاکہ پاکستان کے وجود کا بنیادی مقصد ہی یہ تھا کہ یہاں اسلام نظام نافذ کیا جائے مگر بد قسمتی سے یہاں اسلامی نظام کا راستہ روکنے کی اور پاکستان کو سیکولر و لبرل بنانے کی کوشش کی گئی مگر دینی قوتوں نے اسلام دشمن قوتوں کی سازشوں کو ناکام بنایا ہے اور مجلس عمل اقتدار میں آکر ملک میں حقیقی معنوں میں اسلامی نظام نافذ کرے گی ۔