پاکستان کو بنانے میں تمام مسالک اور طبقات نے ملکر کردار ادا کیا. علامہ عارف حسین واحدی

ٹیکسلا:متحدہ مجلس عمل پاکستان کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل اور اسلامی تحریک کے مرکزی سیکریٹری جنرل علامہ عارف حسین واحدی نے پریس کانفرنس کرتے ھوئے کہا کہ پاکستان کو بنانے میں تمام مسالک اور طبقات نے ملکر کردار ادا کیا اس وقت ملک اسلام اور کلمہ توحید کے نام پر آزاد ھوا تھا،پاکستان کی اصل شناخت ھی اسلام ھے جس شناخت کو پس پشت ڈالنے کی کوشش کی جا رھی ھے اسلام کی بجائے اغیار کا نظام پاکستان میں نافذ ھے لادین،لبرل گروہ اور قوتیں اس ملک میں لادینیت پھیلانے میں مصروف عمل ھیں سودی نظام نے ملک کو دیوالیہ کر کے رکھ دیا ھے عریانی فحاشی بڑھتی جا رھی ھے مہنگائی،لوڈشیڈنگ،کرپشن رشوت ستانی اور طبقاتی نظام نے عوام کا جینا دو بھرکر دیا ھے ۔ملک میں شعوری طور پر جوان اور نوجوان نسل کو دین سے دور کیا جا رھا ھے۔آزادی کو ستر سال ھو گئے مگر وطن عزیز کو اپنی اصلی ڈگر پر لانے کی سنجیدہ اور مؤثر کوشش نہیں کی گئی ملک میں محب وطن اور اسلام دوست قوتوں کو دباؤ میں رکھنے کی کوششیں ھوتی رھیں اور اب تک جاری ھیں ھمارے ملک کے عوام اسلام دوست ھیں اپنے دین سے محبت کرنےوالے ھیں،یہ سب خرابی دین سے دوری اور مغرب سے متاثر ھونے کی وجہ سےھوئی-
علامہ عارف واحدی نے کہا کہ متحدہ مجلس عمل پاکستان نے اپنا انتخاباتی منشور دے دیا ان تمام پہلووں کو مدنظر رکھ کر ھم نے یہ منشور بنایا ھے اور فعالیت اور عوامی جلسوں کا آغاز کیاھے تمام مسالک کے لوگوں میں میل جول اور محبت و بھائی چارے کا بہت اچھا ماحول دیکھنے میں آرھا ھے جو اصل کامیابی اور اچیومنٹ ھے یہی محبت اور رواداری کا جذبہ عوام میں آزادی پاکستان کے وقت دیکھنے کو ملا تھا ملک کے موجودہ حالات میں اس ماحول اور فضا کو قائم رکھنے کی اشد ضرورت ھے اگر اس رواداری کی فضا کو بہتر انداز میں آگے بڑھا سکیں تو کوئی وجہ نہیں ھم ملک کو انتشا،افتراق،نفرت ،فرقہ واریت اور انارکی سے نکال کر آزادی پاکستان کے دور والا ماحول دے سکیں اور اسی سے ملک امن کا گہوارہ بنے گا،پھر یقینی بات ھے کہ ھم وطن عزیز کو اپنی اصل شناخت کی طرف واپس لوٹا سکیں -قرآن و سنت کی بالادستی،سودی نظام کا خاتمہ،کرپشن اور عوامی مشکلات کا خاتمہ،عدل و انصاف کا نفاذ ھی بارہ نکاتی منشور کی اصل روح ھے ،اپنے دین اور وطن سے محبت کرنے والی عوام کو دعوت فکر ھے کہ آئیں ملکر ملک سے اس سامراجی نظام کے تسلط کا خاتمہ کریں اورنظام قرآن و سنت کے تحت آزادی و استقلال کا معاشرہ تشکیل دے سکیں متحدہ مجلس عمل کے یہی مقاصد ھیں۔